اردو(Urdu) English(English) عربي(Arabic) پښتو(Pashto) سنڌي(Sindhi) বাংলা(Bengali) Türkçe(Turkish) Русский(Russian) हिन्दी(Hindi) 中国人(Chinese) Deutsch(German)
2024 10:59
اداریہ۔ جنوری 2024ء نئے سال کا پیغام! اُمیدِ صُبح    ہر فرد ہے  ملت کے مقدر کا ستارا ہے اپنا یہ عزم ! روشن ستارے علم کی جیت بچّےکی دعا ’بریل ‘کی روشنی اہل عِلم کی فضیلت پانی... زندگی ہے اچھی صحت کے ضامن صاف ستھرے دانت قہقہے اداریہ ۔ فروری 2024ء ہم آزادی کے متوالے میراکشمیر پُرعزم ہیں ہم ! سوچ کے گلاب کشمیری بچے کی پکار امتحانات کی فکر پیپر کیسے حل کریں ہم ہیں بھائی بھائی سیر بھی ، سبق بھی بوند بوند  زندگی کِکی ڈوبتے کو ’’گھڑی ‘‘ کا سہارا کراچی ایکسپو سنٹر  قہقہے اداریہ : مارچ 2024 یہ وطن امانت ہے  اور تم امیں لوگو!  وطن کے رنگ    جادوئی تاریخ مینارِپاکستان آپ کا تحفظ ہماری ذمہ داری پانی ایک نعمت  ماہِ رمضان انعامِ رمضان سفید شیراورہاتھی دانت ایک درویش اور لومڑی پُراسرار  لائبریری  مطالعہ کی عادت  کیسے پروان چڑھائیں کھیلنا بھی ہے ضروری! جوانوں کو مری آہِ سحر دے مئی 2024 یہ مائیں جو ہوتی ہیں بہت خاص ہوتی ہیں! میری پیاری ماں فیک نیوزکا سانپ  شمسی توانائی  پیڑ پودے ...ہمارے دوست نئی زندگی فائر فائٹرز مجھےبچالو! جرات و بہادری کا استعارہ ٹیپو سلطان اداریہ جون 2024 صاف ستھرا ماحول خوشگوار زندگی ہمارا ماحول اور زیروویسٹ لائف اسٹائل  سبز جنت پانی زندگی ہے! نیلی جل پری  آموں کے چھلکے میرے بکرے... عیدِ قرباں اچھا دوست چوری کا پھل  قہقہے حقیقی خوشی اداریہ۔جولائی 2024ء یادگار چھٹیاں آئوبچّو! سیر کو چلیں موسم گرما اور اِ ن ڈور گیمز  خیالی پلائو آئی کیوب قمر  امید کا سفر زندگی کا تحفہ سُرمئی چڑیا انوکھی بلی عبدالرحیم اور بوڑھا شیشم قہقہے
Advertisements
Advertisements

ہلال کڈز اردو

پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 

اپریل 2024

اک خواب تھا، اک خواب سے کوشش ہوا
کوشش بھی ہو، پھر بن گئی دل کی دعا
دل کی دعا، بن کے سدا ،جو پہنچی تو 
وہ آسماں بھی ہے گواہ، پھر جو ہوا
ہاں، روشن رہے یہ ستارا، تو چاند بن جانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 

کہیں سفر میں، کہیں نگر میں، مشکلوں کا پہرہ ہو
صبح کٹھن ہو، رات ہو بھاری، یا دن کبھی کڑا ہو
رکتے نہیں ہم، جھکتے نہیں ہم، چلتے رہیں بس یونہی
اپنی خودی میں جنوں وہی ہے، مشکل نہیں جانتی 
امید کا رنگ بن کے، ہر دل کو رنگ جانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 

یہی پناہ بھی، دونوں جہاں بھی، یہی تو ہے ہمنوا
سب کچھ بھی ہو تو بھی کچھ نہیں ہم، بس ایک اس کے سوا
باقی رہیں گے،مٹ نہ سکیں گے، لاکھ بھی چاہے کوئی 
ضدی بڑے ہیں،ہم جو کھڑے ہیں
کھڑے ہی رہیں گے یونہی
کوئی جو سوچ نہ سکے، تم وہ بن کے دکھلانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 
پوچھے جو نام کوئی، تم پاکستان بتانا 
 

Advertisements