شعر و ادب

ہمارا پرچم

ہماری عظمتوں کا استعارہ ہے یہ پرچم
ہماری آنکھ کا تارہ ہے پیارا  ہے یہ پرچم
اُڑے گا آسماں کی وسعتوں میں دیکھنا تم
بہت آگے بڑھے گا رفعتوں میں دیکھنا تم
شہیدوں کے لہو نے یوں نکھارا ہے یہ پرچم
سپہ سالارِ اعظم نے اسے لہرا دیا ہے
عدو کو آئینہ جرأت  سے پھر دکھلا دیا ہے
بلندی پر رہے گا یہ، ہمارا ہے یہ پرچم
لہو سے اس کو سینچا ہے حفاظت بھی کریں گے
جیئیں گے  اس کی خاطر اس کی خاطر ہی مریں گے
ہماری زیست کا مظہر سہارا ہے یہ پرچم
   
 

یہ تحریر 42مرتبہ پڑھی گئی۔

Success/Error Message Goes Here
براہ مہربانی اکائونٹ میں لاگ ان ہو کر اپنی رائے کا اظہار کریں۔
Contact Us
  • Hilal Road, Rawalpindi, PK

  • +(92) 51-927-2866

  • [email protected]

  • [email protected]
Subscribe to Our Newsletter

Sign up for our newsletter and get the latest articles and news delivered to your inbox.

TOP