خصوصی رپوٹ

پاکستان ڈے پریڈ۔ تحفظ وطن کے عہد کی تجدید  

قوم نے ٧٩ واں یوم پاکستان ملی جوش و جذبے سے منایا ۔ملک بھر میں اس حوالے سے متعدد تقریبات منعقد کی گئیں۔ مرکزی تقریب راولپنڈی، اسلام آباد کے سنگم پر واقع شکرپڑیاں گرائونڈمیں ہونے والی پاکستان ڈے پریڈتھی، جس میںوطنِ عزیز کی مسلح افواج کے دستوں کے ساتھ ساتھ چین ، سعودی عرب ، ترکی ، آذربائیجان ، بحرین اور سری لنکا کے دستے اور ہوا باز بھی شریک ہوئے۔اس موقع پرپاک  فضائیہ کے طیاروں کے ساتھ ساتھ چین اور ترکی کے ہوا بازوں نے فضائوں میں پاکستان کے ساتھ اپنی اپنی دوستی کے خوب رنگ بکھیرے۔ اس یادگار موقع پر ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد  گیسٹ آف آنر تھے۔ 



پریڈ میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان بھی موجود تھے ۔سب سے پہلے وائس چیف آف ائیر سٹاف عاصم ظہیر پریڈ وینیو  میں تشریف لائے ۔ کیونکہ ائیر چیف مارشل مجاہد انور خان فلائی پاسٹ کی قیادت کر رہے تھے ۔ اس کے بعد پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی ،اس کے بعد چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ ، چیئر مین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات ، وزیر دفاع جناب پرویز خٹک ،وزیر اعظم عمران خان تشریف لائے، بگل بجا کر صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی کی آمد کا اعلان ہوا جو پریذیڈنٹ باڈی گارڈ کی روایتی بگھی میں سوار ہو کر پریڈ گرائونڈ پہنچے ۔ وزیر اعظم اور مسلح افواج کے سربراہان نے ان کا استقبال کیا ۔




تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا۔ جس کے بعد قومی ترانہ بجایا گیا۔ اس موقع پر ''پاکستان زندہ باد'' کے سلوگن کی خوب صورت جھلک پیش کی گئی ۔صدر مملکت نے پریڈ کمانڈر بریگیڈئیر نسیم انور کے ہمراہ پریڈ میں شامل دستوں کا معائنہ کیا ۔ جن میں ١٦پنجاب رجمنٹ،٤١ فرنٹیئرفورس رجمنٹ،١٤ ناردرن لائٹ انفنڑی ،٦٤٩ مجاہد فورس بٹالین ، پاک بحریہ ، پا ک فضائیہ ، اسلام آباد پولیس، ٹرائی سروسز لیڈی آفیسرز ، بوائے سکائوٹس ، گرلز گائیڈز ،سپیشل سروسزگروپ شامل تھے ۔ اس کے بعد ائیر چیف مارشل مجاہد انور جے ایف ١٧ تھنڈر میں سوار فضا میں نمودار ہوئے اور اپنے کاک پٹ سے براہ راست پیغام دیا۔''میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ پاک فضائیہ ملکی آزادی اورخود مختاری کا تحفظ کرے گی۔ پاکستان زندہ باد'' ۔ جے ایف ١٧ تھنڈر کی گھن گرج نے وفاقی دارالحکومت کا ماحول گرما دیا۔ائیر چیف نے سلامی کے چبوترے کے سامنے سے گزرتے ہوئے صدر پاکستان کو سلامی دی۔اس کے بعد چین اور ترکی کے طیاروں نے ائیر شو کے ساتھ فضا میں پاکستان دوستی کے رنگ بکھیر دیئے اور پریڈ سکوائر کے چاروں طرف شاندار فضائی مظاہرہ کیا ۔

پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے صد ر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ''پاکستان ایک حقیقت ہے ۔ بھارت کو یہ تسلیم کر لینا چاہیے۔اس خطے کو امن کی ضرورت ہے ۔ہم مسائل کو مذاکرات سے حل کرنے پر یقین رکھتے ہیں۔ لیکن امن کی خواہش کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے۔ بھارت بھی حقائق کو تسلیم کرے۔ آج کی پریڈ پیغام دے رہی ہے کہ ہم پر امن قوم ہیں مگر اپنے دفاع سے غافل نہیں ۔ ہم دنیا کی وہ واحد قوم ہیں جس نے دہشت گردی کی طویل لڑائی لڑی ۔ جانی و مالی قربانی دی مگر بے پناہ حوصلے سے دہشت گردی کا مقابلہ کیااور دہشت گردوں کو کامیاب نہیں ہونے دیا۔ قوم کے عزم اور افواج پاکستان کی جرأت وبہادری کی بدولت نہ صرف سرخرو ٹھہرے بلکہ امن و قومی تعمیر و ترقی کے راستے پر گامزن ہوئے ۔آج ہم دفاعی لحاظ سے مضبوط اور پر امن ایٹمی طاقت ہیں ۔ہم ذمہ دار قوم ہیں ، ماضی سے سبق سیکھ کرمستقبل تعمیر کر رہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ہم تلخیوں اور نفرتوں کو ختم کر کے خوشحالی کے بیج بونا چاہتے ہیں۔بھارت کا رویہ نامناسب اور غیر ذمہ دارانہ رہا جس کی بدولت خطے میں امن مسلسل خطرات سے دو چار رہا ہے ۔پلوامہ حملے کے بعد بغیر ثبوت کے پاکستان پر الزام لگا دیا۔دھمکی آمیز پیغامات سے جنگ کی فضا پیدا کی گئی۔ بین الاقوامی قوانین کو توڑ تے ہوئے پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی گئی ۔اس کا جواب دینا ہمارا فرض تھا۔ بہترین حکمت عملی سے مؤثر اور فوری جواب دیا اس پر پوری قوم اپنی افواج کو زبردست خراج تحسین پیش کرتی ہے۔بلا شبہ ہماری افواج قوم کا فخر اور وقار ہیں۔'' صدر پاکستان نے مزید کہا، '' افغانستان کے عوام طویل جنگ سے نجات چاہتے ہیں ۔ ان کی اس خواہش میں ہم ان کے ساتھ ہیں۔'' آخر میں صدر مملکت نے دوسرے معزز مہمانوں کے علاوہ ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد کی خصوصی آمد پر ان کا شکریہ اداکیا۔







صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی کے خطاب کے بعد پیادہ اور مشینی دستوں نے اپنے اپنے مخصوص انداز میں پریڈ کرتے ہوئے صدر پاکستان کو سلامی دی ۔ بکتر بند (اے پی سیز) آرٹلری ، سپیشل سروسز گروپ اور پاکستان رینجر زکے اونٹوں پر سوار دستے بھی سلامی کے چبوترے کے سامنے سے گزرے۔ پریڈ میں پاکستان کے جدید ترین نصر میزائل ، شاہین ون اور تھری ، ٹریکنگ ریڈار سسٹم ، الخالد ٹینک، بغیر پائلٹ طیارے شہپر اور براق سمیت دیگر دفاعی سامان حرب کا بھی مظاہرہ کیا گیا۔پریڈ میں صوبائی فلوٹس نے اپنے اپنے علاقے کے ثقافتی رنگوں کو اجاگر کیا۔
آرمی ایوی ایشن اورنیول ایوی ایشن کے کوبرا ۔ ایم آئی١٧ ، پیوما ہیلی کاپٹروں پر مشتمل دستوں نے ٣٠٠فٹ کی بلندی پر شاندار فضائی مارچ پاسٹ کا مظاہر کیا ۔ فضائوں میں قوسِ قزح بکھیرتی فارمیشن نے شائقین سے داد تحسین وصول کی ۔کمانڈوز کے دس ہزار فٹ کی بلندی سے فری فال مظاہرے نے دیکھنے والوں کے جوش میں مزید اضافہ کیا ۔ تینوں مسلح افواج اور غیر ملکی پیراٹروپرزجن میں چین، ترکی ،سعودی عرب ، آذربائیجان ، بحرین اور سری لنکا کے ممالک کے پیراٹروپرز بھی شامل تھے، نے جمپ لگانے کاشاندار مظاہرہ پیش کیا۔ان پیرا ٹروپرز کی قیادت ایس ایس جی کے کمانڈر میجر جنرل طاہر مسعود بھٹہ نے کی ۔یکے بعد دیگر ے یہ ٹیم اپنے اپنے ملک کا پرچم اٹھائے فضا سے زمین پر سلامی کے چبوترے کے سامنے اتری ۔صدر مملکت نے فرداً فرداً تمام پیرا شوٹرز سے مصافحہ کیا۔ 


 
 



پریڈ میں پاکستانی ثقافت کے سب رنگ نما یاں رہے جن میں آزاد کشمیر ، گلگت  بلتستان، بلوچستان ، خیبر پختونخوا، سندھ اور پنجاب کے خصوصی فلوٹس نے اپنی اپنی ثقافت کے رنگ بکھیر تے ہوئے لوگوں سے خوب داد وصول کی ۔


 
















پریڈ کے اختتام پر مختلف سکولوں کے بچوں نے ایک خوبصورت فلوٹ پر سوار ہو کر ہاتھوں میں پاکستان کے جھنڈے لہراتے ہوئے ، گلوکار ساحر علی بگا کے ساتھ مل کر خصوصی نغمہ ''دل دل کی آواز ، ہر دل کی آواز ، پاکستا ن زندہ باد'' پیش کر کے شرکاء کا لہو گرمایا ۔ جوش اور جذبے کا عزم دل میں لئے وفاقی وزراء ، غیر ملکی مندوبین، سفیروں ، فنکاروں ، پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کی بہت بڑی تعداد اور ملکی اور غیر ملکی نمائندوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ اس طرح افواج پاکستان کی اس شاندار پریڈ نے جذبۂ حب الوطنی اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ قومی ولولوں اور جذبو ں کوتازہ کرتے ہوئے ''پاکستان زندہ باد'' کے نعرے کی خوب صورت جھلک پیش کی ۔


 


یہ تحریر 93مرتبہ پڑھی گئی۔

Success/Error Message Goes Here
براہ مہربانی اکائونٹ میں لاگ ان ہو کر اپنی رائے کا اظہار کریں۔
Contact Us
  • Hilal Road, Rawalpindi, PK

  • +(92) 51-927-2866

  • [email protected]

  • [email protected]
Subscribe to Our Newsletter

Sign up for our newsletter and get the latest articles and news delivered to your inbox.

TOP