شعر و ادب

شہیدوں اور غازیوں کے نام

شہدائے وطن! غازیانِ وطن
تُم ہی آنِ وطن، تم ہی شانِ وطن
تُم نے خاکِ وطن کو فروزاں کیا
ذرّے ذرّے کو اِک مہرِتاباں کیا
تُم نے اپنے لہُو سے جلا کر دیئے
سرحدوں پہ وطن کی چراغاں کیا
تُم ہمیشہ گِرے بن کے برقِ غضب
تُم نے دشمن کو ہر بار حیراں کیا
رکھ کے پیشانی جلتی ہوئی ریت پر
تُم نے صحرائوں کو گُل بہ داماں کیا
خار چُنتے رہے، زخم کھاتے رہے
میرا رستہ مگر تُم نے آساں کیا
جب بھی ارضِ وطن نے پُکارا تمہیں
تُم نے پورا ہر اِک عہد و پیماں کیا
تُم نے گولی کو سینے پہ روکا مگر
خواب دشمن کا تُم نے پریشاں کیا
رات بھر خود فصیلوں پہ جاگا کئے
یوں مری نیند کا تُم نے ساماں کیا
بحر و بر بھی ترے، یہ فضائیں تری
گونجتی اﷲ ھُو کی صدائیں تری
حدِ امکاں سے آگے اُڑانیں تری
پوری دُنیا میں ہیں داستانیں تری
اے مجاہد مرے! تیری تقدیس پر
آرزو ہے دل وجاں نچھاور کروں
جو اٹھائے ہوئے ہیں عَلم چُوم لوں
ہے تمنّا تمہارے قدم چُوم لوں
تیری مقروض ہے سَرزمینِ وطن
راہِ حق کے مسافر تیرا شکریہ!
تم نے ہر اپنا ارمان قرباں کیا
میرے ہر دَرد کا تُم نے درماں کیا

 

یہ تحریر 102مرتبہ پڑھی گئی۔

Success/Error Message Goes Here
براہ مہربانی اکائونٹ میں لاگ ان ہو کر اپنی رائے کا اظہار کریں۔
Contact Us
  • Hilal Road, Rawalpindi, PK

  • +(92) 51-927-2866

  • [email protected]

  • [email protected]
Subscribe to Our Newsletter

Sign up for our newsletter and get the latest articles and news delivered to your inbox.

TOP