متفرقات

آمدِ بہار

(ماہِ مارچ میں منائے جانے والے دنوں کا تذکرہ)
رنگِ شکستہ، صبحِ بہارِ نظارہ ہے
یہ وقت ہے شگفتنِ گلہائے ناز کا
(غالب)
موسمِ سرما کی سَرد ہوائوں ، بے برگ ٹہنیوں اور اُداس راتوں کے بعد جب مختلف پھولوں کی خوش رنگ پتیاں دوشِ آب پر سوار چلی آتی ہیں، جب چڑیاں چہچہاتی ہیں، بُلبلیں نغمہ سراہوتی ہیں اور بادِ نسیم کے جھونکے اٹکھیلیاں کرتے دکھائی دیتے ہیں تو محسوس ہوتا ہے کہ یقیناہر موسم کا اپنا ایک اندازہوتا ہے اور یہ انداز دلوں کو لُبھادینے والے موسمِ بہار کا ہے
مارچ کا مہینہ ہمارے ہاںتاریخی لحاظ سے بہت اہمیت کا حامل ہے۔ اس مہینے سے وطنِ عزیز کی کچھ حسین اور ناقابلِ فراموش یادیں بھی وابستہ ہیں لیکن اس مہینے کو پاکستان میں ہی نہیں بلکہ دیگر ممالک میں بھی ایک خاص شہرت حاصل ہے اور وہ وجہ اس کے موسمِ بہار سے منسلک ہونے کے ناتے سے ہے۔ لفظ ِ بہاربذاتِ خود بہت دلکش اور روح پرور لگتا ہے اورپھر اس مہینے کی رونقیں اور رعنائیاں بھی دل کو لبھادینے والی ہوتی ہیں۔بہار کی آمد کے ساتھ ہی ہر شاخ خوبصورت رنگ اوڑھ لیتی ہے ، درخت زرد پیرہن اُتار کر خود کو رنگوں میں ڈھانپ لیتے ہیں، فضا خوشبوئوں سے معطر ہونے لگتی ہے اور جن چہروں پر خزاں کی اُداسی چھائی ہوتی ہے وہ چہرے بھی کھِل اُٹھتے ہیں۔گویا یوں محسوس ہوتا ہے جیسے پھر سے ایک نئی زندگی کے آثار نمودار ہونے لگے ہیں۔ اسی لئے موسمِ بہار کو دُنیابھر میں نہایت خوشگوار انداز سے خوش آمدید کہا جاتا ہے اور سلسلے میںبہت سی دلفریب تقریبات بھی منعقد کی جاتی ہیں۔ چونکہ اس مہینے سے اقوامِ عالم کے بہت سے تاریخی واقعات اور تقریبات  وابستہ ہیںاس لئے یہاں ہم اُن چند انوکھی اور خوش کن تقریبات کا ذکر کریں گے جومارچ کے مہینے میں دنیا کے مختلف ممالک میں رسم و رواج کے طور پر ہر سال منائی جاتی ہیں اور ان کے منفرد ہونے کی بناء پر یہ اقوامِ عالم میں بے حد مشہور بھی ہیں۔

ورلڈ کمپلیمنٹ  ڈے(World Compliment Day)
ورلڈ کمپلیمنٹ  ڈے ایک ایسا دن ہے جو مارچ کی یکم تاریخ کو بہت سے ممالک میں منایا جاتا ہے۔ اس دن کی مناسبت سے لوگ اپنے اردگرد موجود دوست احباب اور خاندان والوں کو اچھے الفاظ اور القابات سے نوازا کرتے ہیں۔ اس دن کو نیدر لینڈز کے ایک شخص (Hans Poortvliet) نے 2000 میں متعارف کروایا تھا۔ پہلے اس دن کو قومی سطح پر منایاجاتا تھا لیکن پھر اس کی مقبولیت بڑھتے بڑھے دوسرے ممالک تک جاپہنچی اورچونکہ یہ لوگوں میں خوشیاں بانٹنے کا باعث بنتا تھا اس لئے پھر یہ ورلڈ کمپلیمنٹ ڈے بن گیا۔ بنیادی طور پر اس دِن کا مقصد لوگوں کی حوصلہ افزائی کرنا اور ان کو ذاتی خوشی اور اعتماد مہیاکرنا ہے۔ 
ورلڈ  ڈے آف پریئر(World  Day  Of    Prayer)
یہ دن ہر سال باقاعدگی سے مارچ کے پہلے جمعہ کو بہت سے ممالک میں منایاجاتا ہے۔ یہ مسیحی خواتین کی ایک عالمی تحریک ہے جو 19 صدری میں امریکہ اور کینیڈا میں شروع ہوئی اور1927 میں دُنیا بھر میں عام ہوگئی۔یوں تو عبادت کے لئے ہر دِن خاص ہے لیکن اس دن میںایک مخصوص عبادت کا اہتمام کرنے کرنے کے لئے ہر شخص اپنی تمام مصروفیات اور افکار کو چھوڑ کر اس عبادت میں یکسو ہونے کی کوشش کرتا ہے۔اس خاص دن کا تعلق خصوصی طور پر مسیحی برادری سے ہے۔

انٹرنیشنل ویمنز  ڈے
(International Women's Day)
خواتین کا عالمی دِن ہر سال مارچ کی8 تاریخ کو دُنیا بھر میں منایا جاتاہے۔ یہ دِن خواتین کے حقوق کی تحریک میں ایک مرکزی نقطے کی جگہ رکھتا ہے اسی لئے اس کو ویمنز ہسٹری منتھ(Women's History Month)بھی کہا جاتا ہے۔ امریکہ کی سوشلسٹ پارٹی نے28 فروری1909 کو نیویارک میں یومِ خواتین کا انعقاد کیا، بعدازاں 1910 کی بین الاقوامی سوشلسٹ ویمن کانفرنس میںجرمنی کی ایک انقلابی(Clara Zetkin)نے تجویز پیش کی کہ8 مارچ کو ورکنگ ویمن کی یاد میں سالانہ بنیاد پربطورِ اعزاز کے ایک خاص دن کااہتمام کیا جائے۔تب سے8 مارچ کے دن کو ورلڈ ویمنز ڈے یا انٹرنیشنل ویمنز ڈے کے طور پر منایاجاتا ہے۔ اس دن کو منانے کا خاص اہتمام خواتین کی سوشلسٹ تحریکوں اور ایکٹوسٹس نے باقاعدہ طور پر کیا تھا۔


پلانٹ اے فلاور  ڈے(Plant  a Flower Day)
یہ دن مارچ کے مہینے کی زیادہ تر 12تاریخ سے وابستہ ہے اس دِن قومی پلانٹ یا پھول لگانے کی ایک تحریک کی پیروی کی جاتی ہے۔ بہت سے لوگ بہار کے دنوں کا انتظار کرتے ہیں اورپھر خصوصی طور پر باغبانی کے شوق اور فرض کو نبھاتے ہیںچونکہ یہ ایک نئے سیزن کا آغاز ہوتاہے اس لئے سرسبز و شاداب ماحول بنانے میں یہ فعل کافی کار آمد ثابت ہوتا ہے۔پھولوں کی موجودگی ماحول کو دلکش بنا دیتی ہے اور ہر خاص و عام اس سے محظوظ ہوتا نظر آتا ہے۔ پھولوں کی مناسبت سے بات کی جائے توMarigoldsاورDaffodils کو اس مہینے کے پھول کہاجاتا ہے۔

'ٹی فار ٹو' ٹیوزڈے ('Tea For Two' Tuesday)
جیسے کہ اِس دن کے نام سے واضح ہے کہ یہ دن لوگوں سے محبتیں بانٹنے کا ایک چھوٹا سا ذریعہ ہے جس کی مناسبت سے لوگ مارچ کے تیسرے منگل کو دو لوگوں یا اس سے زیادہ کے ساتھ بیٹھ کر چائے پیتے ہیں۔ یہ دن خاص طور پر چائے کے شوقین افراد کی جانب سے 2016 میں تشکیل دیاگیا ہے۔ مارچ کے تیسرے منگل کو دُنیا کے مختلف ممالک کے لوگ خصوصی وقت نکال کر اپنے دوستوں ، عزیزوں اور رشتہ داروں کے لئے ایک ٹی پارٹی کا اہتمام کرتے ہیں اوراس طرح ایک Get Togetherکا ذریعہ بن جاتا ہے۔ عمومی طور پر یہ دِن منانے کامقصد اپنی روز مرہ کی مصروفیات سے وقت نکال کے اپنے عزیزو ں اور دوستوں کی رقابت حاصل کرنا ہے۔

نو روز ڈے(Nowroz Day)
نو روز فارسی زبان کا لفظ ہے اور اس کے لغوی معنی ہیں ''نیا دن۔'' ایرانی کیلنڈر کے مطابق نوروز آمدِ بہار اور سالِ نو کا آغاز اور استقبال کرنے کادِن ہے۔ یہ دِن مغربی چین سے ترکی تک کروڑوں لوگ20یا 21 مارچ کو مناتے ہیں۔ نو روز موسمِ بہار کی آمد کے جشن کا دِن بھی ہے اور ایران، افغانستان، تاجکستان، اُزبکستان، پاکستان اور بھارت کے کچھ حصوں اور شمالی عراق و ترکی کے کچھ علاقوں میں کیلنڈر ی سال کا نقطۂ آغاز بھی یہی دن ہے۔ 
یہ دِن بہت محبت و جوش و جذبے کے ساتھ منایا جاتا ہے اور لوگ آپس میں مل بیٹھ کے تقریبات کرتے ہیں۔  نو روز کو(Persian new year) بھی کہا جاتا ہے اور اِس دِن ایران میں باقاعدہ تعطیل ہوتی ہے۔ اگر چہ 11ویں صدی عیسوی میں نئے سال کی آمد پر ایرانی تقویم کی اصلاح کے بعدسے نو روز منایا جارہا ہے لیکن اقوامِ متحدہ نے2010 میں اپنی قرارداد کے ذریعے اس کو باضابطہ طور پر ''نو روز کا عالمی دِن'' مقرر کیا ہے۔

فریگرینس ڈے(Fragrance  Day)
یہ دِن بہت سے ممالک میں خوشبوئیں بکھیرنے کے دِن کے طور 21 مارچ کو منایا جاتا ہے۔ اس دِن تمام لوگ بہترین خوشبو لگا کر ایک دوسرے سے ملتے ہیں اور پرفیومز دینے کی روایت بھی نبھاتے ہیں۔ اس دِن کوئی شخص مردو خواتین بغیر نہائے گھروں سے نہیں نکلتے بلکہ خصوصی طور پر خاص خوشبو لگاتے ہیں جس سے ملنے والوں پر ایک اچھا تاثر جائے۔اس دن کا مقصد فضائوں کو حسین اور دلفریب خوشبوئوں سے معطر کرنا ہے۔
یہ ہیں وہ چند چیدہ چیدہ تقریبات اور واقعات جو عالمی سطح پر دُنیا کے مختلف مقامات پر  رونماہوتے ہیں۔ یہ مہینہ یوں تو تمام مہینوں جیسا ہے لیکن چونکہ موسمِ بہار کی آمد کا پیغام لاتا ہے اسی مناسبت سے اس کوخاص اہمیت حاصل ہے۔ جہاں مارچ کے مہینے میں یہ سب واقعات رونما ہوتے ہیں وہیں تاریخ پر نظر دوڑائی جائے تو بہت سی عظیم شخصیات اور بہت سی اہم ایجادات بھی اسی مہینے میں رونما ہوئیں۔ جیسا کہ کانگریس کی پہلی میٹنگ 4 مارچ1789 میں منعقد ہوئی، الگزینڈر گراہم بیل جیسی عظیم شخصیت3 مارچ1847 کو پیدا ہوئی۔ مارچ کی 10 تاریخ کو1862 میں پہلی پیپر منی Money ایشو کی گئی۔13 مارچ1781 میں یورینس(Uranus) دریافت کیاگیا۔ 14 مارچ1879 میں عظیم سائنسدان البرٹ آئن سٹائن پیدا ہوئے۔ 18 مارچ1965 میں پیس پرپہلی واک کی گئی۔20 مارچ کوموسمِ بہار کا باقاعدہ آغاز ہوتا ہے۔21مارچ2006 میں ٹویٹر پر پہلی ٹویٹ کی گئی۔29 مارچ1886 میں کوکا کولا کو ایجاد کیاگیا۔ پولیو کے خلاف پہلی ویکسینجس کو(IPV)کہا جاتا ہے، 26مارچ 1950کی دہائی میں امریکی فزیشن جانسن سالک نے پہلی دفعہ تیار کی، جس کو مختلف مراحل سے گزار کر 1954سے باقاعدہ طور پر استعمال کیا جانے لگا۔ امریکیوں نے رشین ایمپائر سے الاسکا(Alaska)کو30 مارچ1867 میں خریدا، میتھیمیٹکس کے ماہر  Rene Descartes بھی31 مارچ1596 میں پیدا ہوئے۔ اس کے علاوہ تاریخ کے اوراق کھولنے سے اور بھی بہت سی شخصیت اور عظیم واقعات آنکھوںکے سامنے گزرتے ہیں جو مارچ کے مہینے سے وابستہ ہیں لیکن تمام باتوں میں دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ بہار کی آمد کا مہینہ ہے جو سب سے دلفریب بات ہے اور اسی مہینے میں ہماری قراردادِپاکستان منظور کی گئی جو وطنِ عزیز کی جانب ہمارا پہلا قدم تھا۔خدا اس ارضِ پاک کو ایسی ہزاروں بہاریں دیکھنا نصیب فرماے اور یہ چمن یونہی رنگا رنگ پھولوں سے سجا اور مہکتارہے۔ آمین!!
 

Read 22 times



TOP