ہلال نیوز

پاکستان کے اندر امن افغانستان کے  امن سے مشروط ہے۔ جنرل قمرجاوید باجوہ

چیف آف آرمی سٹاف کا شمالی اور جنوبی وزیرستان کا دورہ، قبائلی عمائدین سے ملاقات

گزشتہ دنوں چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ نے میران شاہ کا دورہ کیا اورشمالی و جنوبی وزیرستان کے قبائلی عمائدین سے ملاقات کی۔ اس موقع پر چیف آف آرمی سٹاف نے کہاکہ پاک افغان بارڈر پر باڑ اور مؤثر اقدامات سے بارڈر پار سے دہشت گردی کے واقعات میں کمی واقع ہورہی ہے۔ تاہم پاکستان کے اندر امن افغانستان کے امن سے مشروط ہے جس کے لئے پاکستان اپنا کردار ادا کررہا ہے۔ چیف آف آرمی سٹاف نے کہاکہ افغانستان ہمارا برادر مسلمان ملک ہے اور ہم افغانستان میں بھی ایسے ہی امن کی خواہش کرتے ہیں جیسے کہ پاکستان کے لئے کرتے ہیں۔ چیف آف آرمی سٹاف نے قبائلی عمائدین کو نوجوان نسل کی رہنمائی میں اپنا کردار ادا کرتے رہنے پر بھی زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ بڑوں کا تجربہ اور دانشمندی کا نوجوان نسل کی قوت اور صلاحیت کے ساتھ امتزاج ہی کامیابی کا نسخہ ہے۔



ماضی کے چند آئی ای ڈی حادثات سے متعلق چیف آف آرمی سٹاف نے کہاکہ وہ خبرداررہیں اور دشمن قوتوں کے ساتھ مل کر کام کرنے والوں اور شہریوں کا  امن خراب کرنے والوں پر کڑی نظر رکھیں۔ چیف آف آرمی سٹاف نے کہا کہ اُن چند شرپسند عناصر سے نمٹنا کوئی مشکل کام نہیں تاہم سکیورٹی فورسز کی جان کے نذرانے دینے کے لئے تیار ہونے کے باو جود بھی ہم اس بات کو یقینی بناتے ہیں کہ امن پسند شہریوں کو نقصان نہ پہنچے۔ یہ صرف باہمی تعاون سے ممکن ہے کہ ہم ایسے دہشت گردوں کو شکست دے سکتے ہیں۔
 قبائلی عمائدین نے چیف آف آرمی سٹاف کو اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ وہ امن کو قائم رکھنے میں سکیورٹی فورسز کی ہر ممکن مدد جاری رکھیں گے۔ انہوں نے چیف آف آرمی سٹاف سے جاری پراجیکٹس کوتیزی سے مکمل کرنے کی بھی درخواست کی۔ چیف آف آرمی سٹاف نے کہا کہ تمام پراجیکٹس کو مرحلہ وار دیکھا جائے گا اور ان کی تکمیل علاقے میں امن، استحکام اور خوشحالی لائے گی۔ کمانڈر پشاور کور بھی اس موقع پر اُن کے ہمراہ تھے۔



 

Read 57 times


Share Your Thoughts

Success/Error Message Goes Here
Note: Please login to your account and leave your thoughts on this article.

TOP